HIPPOPOTAMUS- دریائی گھوڑا

دریائی گھوڑا
HIPPOPOTAMUS in Parco Natura Viva, Verona, Italy

The common hippopotamus (Hippopotamus amphibius), or hippo, is a large, mostly herbivorous mammal in sub-Saharan Africa, and one of only two extant species in the family Hippopotamidae, the other being the pygmy hippopotamus (Choeropsis liberiensis or Hexaprotodon liberiensis). The name comes from the ancient Greek for “river horse” (ἱπποπόταμος). After the elephant and rhinoceros, the common hippopotamus is the third-largest type of land mammal and the heaviest extant artiodactyl. Despite their physical resemblance to pigs and other terrestrial even-toed ungulates, their closest living relatives are cetaceans (whales, porpoises, etc.) from which they diverged about 55 million years ago. The common ancestor of whales and hippos split from other even-toed ungulates around 60 million years ago. The earliest known hippopotamus fossils, belonging to the genus Kenyapotamus in Africa, date to around 16 million years ago.(pics: Parco Natura Viva, Verona, Italy)

دریائی گھوڑا جنوب صحرائی افریقہ میں رہنے والا ایک عظیم الجثہ جانور ہے۔ یہ ایک  قوی الجثہ افریقی سم شگافتہ حیوان ہے جو کہ سبزی خور ہے ۔اس کا سر اور تھوتھنی بہت بڑی ہوتی ہے ۔ اس کی جلد بہت موٹی اور جسم بالوں سے محروم ہوتا ہے ۔ ٹانگیں چھوٹی ہوتی ہیں ۔ خشکی اور پانی میں رہتا ہے ۔

اس کا نام دریائی گھوڑا اس کے یونانی نام  کی وجہ سے رکھا گیا ہے جس کا لفظی مطلب دریا کا گھوڑا بنتا ہے۔ حالانکہ یہ شکل میں خنزیر کی طرح لگتا ہے لیکن درحقیقت یہ حوتیہ جانوروں (وھیل وغیرہ) کا قریبی رشتہ دار ہے۔

افریقا میں ہونے والی خانہ جنگی کے باعث ان کی نسل خطرے سے دوچار ہے۔

HIPPOPOTAMUS
دریائی گھوڑا اٹلی کے شہر ویرونا کے سفاری پارک میں
hippo
hippopotamus
دریائی گھوڑا
دریائی گھوڑوں کا گروہ پانی میں

 

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: